X
technicalguru

پاکستان کے شاندار میزائل کے تجربات شاہین 1،شاہین 2،شاہین 3

technicalguru
technicalguru

پاکستان کے شاندار میزائل کے تجربات شاہین 1،شاہین 2،شاہین3

“شاہین 1

“شاہین 1” ایک بہت ہی مختصر فاصلہ ، روڈ موبائل ، ٹھوس ایندھن والا ایک بیلسٹک سسٹم میزائل ہے۔ ایسا لگتا ہے کہ یہ چینی DF-11 میزائل کا ایک چھوٹا نظریہ ہے. 


ایک نظر “شاہین 1” پر

  پاکستان اور چین کے باہم تجربات سے بنایا گیا ۔یہ اس وقت پاکستان کے پاس موجود ہے ۔یہ میزائل ایک شار ٹ ترین بلیسٹک میزائل سسٹم ہے۔اس مزائل کی لمبائی 12 میٹر ہے ۔اور اس کا قطر ایک میٹر ہے ۔اس شاٹ رینج میزائل سسٹم کا وزن 9500 کلو گرام ہے۔ اس میزائل کو ایک آپریشنل حیثیت حاصل ہے۔ شارٹ رینج بیلسٹک میزائل سسٹم کی مار ک کرنے کی حد 750 کلومیٹر ہے ۔یہ میزائل 2003 سے پاکستان میں حاضر خدمت ہیں ۔


شاہین 1 کی دشمن کو مارک کر نے کی حد 750 کلومیٹر ہے. جب کہ اس کی معیاری پے لوڈ اور 200 میٹر پر ای پی کی درستگی بھی شامل ہوتی ہے۔ یہ میزائل ایک سنگل مرحلہ ،اورٹھوس پروپیلنٹ انجن کا استعمال کرتا ہے.

اس میں واحد دھماکہ خیز ، کیمیائی مواد یا 35 کلو جوہری وار ہیڈ وزن تک لے جاسکنے کی صلاحیت رکھتے ہے۔ اس میزائل کی لمبائی 12.0 میٹر ، قطر میں 1 میٹر ، اور اس کا وزن 9،500 کلو ہے.

ترقی اور ٹیسٹ

شاہین 1 کی ترقی 1993 میں شروع ہوئی تھی. اور یہ میزائل پہلی دفعہ مارچ 1999 میں دنیا کے سامنے دکھایا گیا تھا ۔پاکستان کے ذریعہ عوامی طور پر تسلیم شدہ پہلا فلائٹ ٹیسٹ اپریل 1999 میں ہوا ، حالانکہ ہوائی جہاز کے ٹیسٹ جولائی 1997 کے اوائل میں شروع ہوسکتے تھے۔ اس میزائل سسٹم کو مارچ 2003 میں پاکستان فوج اسٹریٹجک فورس کمانڈ نے خدمت میں لایا تھا۔

کامیاب تجربے

اور اس میزائل کا تجربہ اپریل 2012 اور دسمبر. 2015 میں کم سے کم دو بار کامیاب تجربہ کیا گیا ہے.




“شاہین 2″

“شاہین 2” ایک میزائل ایک درمیانے فاصلہ اور روڈ موبائل سسٹم ٹھوس ایندھن والا بیلسٹک میزائل سسٹم ہے۔ ایسا لگتا ہے کہ اس کا ڈیزائن شاہین 1 کی ترمیم کا ایک بہت بڑا مرحلہ تھی. اس سسٹم کی ترمیم موٹر اور آر وی کا استعمال کیا گیا ہے. ہی میزائل عوامی جمہوریہ چین ایم 18 پر مبنی ہے حالانکہ اس کی کوئی تصدیق نہیں کی گئی ہے.

ایک نظر “شاہین 2” پر

یہ میزائل پاکستان نے خود تیار کیا ہے. اور اس وقت تک پاکستان کے پاس موجود ہے. یہ میزائل ایک میڈیم رینج بیلسٹک میزائل سسٹم ہے. یہ ایک روڈ موبائل میزائل سسٹم ہے. اس میزائل کی لمبائی17.2 میٹراور قطر 1.4 میٹر ہے. اسکا وزن کا آغاز میں 23،600 کلوگرام اور 700 کلو گرام وار ہیڈ لے جانے کی صلاحیت رکھتاہے.

شاہین 2 میزائل سسٹم کی دشمن کو مارک کرنے کی حد 1500 سے 2000 کلو میٹر تک ہے. اس میزائل کو آپریشنل حیثیت حاصل ہے. اور یہ 2014 میں پاکستان کی خدمت میں پیش کیا گیا.
شاہین 2 کی مارک کی حد 1،500-2،000 کلومیٹر کے درمیان میں ہے۔ اس میزائل کی لمبائی 17.2 میٹر اور قطر 1.4 میٹر ہے. اور اس کا وزن 23،600 کلو ہے۔ اس سسٹم میں RV میں درستگی کو بہتر بنانے کے لیے چار چھوٹی موٹریں نسب ہیں۔  میزائل 700 کلو وزنی ایک ہی وار کو لے جانے کے لئے ڈیزائن کیا گیا ہے. پے لوڈ کا وزن بڑھانے سے میزائل کی مارک کرنے کی حد کو چھوٹا کر سکتا ہے۔
یہ میزائل 35 کلو ٹن تک جوہری ہتھیاروں کو لے جانے کے صلاحیت رکھتا ہے.


“شاہین 3″

شاہین 3 میزائل دو مرحلہ والا میزائل سسٹم ہے ٹھوس ایندھن والااور درمیانے فاصلے کو مارک کرنے والا بیلسٹک میزائل ہے. جو پاکستان اس وقت کے ذریعہ ترقی میں ہے۔ یہ میزائل سسٹم مکمّل طور پر ایٹمی اور روایتی دونوں ہتھیاروں کو 2،750 کلومیٹر کی حدود تک لے جانے کی طاقت رکھتا ہے. جو اس سے پاکستان وقت کے پاکستان کے اسٹریٹجک اسلحہ خانے میں سب سے لمبی رینج والامیزائل ہے.
یہ سب سے پہلے مارچ 2016 میں فوجی پریڈ گراؤنڈ کے دوران دکھایا گیا تھا۔

ایک نظر “شاہین 3” پر

شاہین 3 پاکستان میں خود تیار کیا گیا میزائل ہے. اور اسکی پاسداری بھی پاکستان کے پاس ہے. یہ میزائل ایک میڈیم رینج بیلسٹک میزائل سسٹم میں شمار کیا جاتا ہے. اس میزائل کی لمبائی 19.3 میٹر اور اس کا قطر:1.4 میٹرہے. یہ جوہری اور روایتی دونوں ہتھیاروں کو لے جا نے کی صلاحیت رکھتا ہے. اسکی دشمن کو مارک کرنے کی حد 2750 کلو میٹر دور تک ہے.
شاہین 3 کی مارک حد2،750 کلومیٹر طویل حدود کی نشاندہی سے شاہین 2 کی نسبت معمولی سی بہتری کی تجویز پیش کی گئی ہے.
یہ میزائل مارچ اور دسمبر میں دو دفعہ 2015 میں کم سے کم دو کامیاب تجربات سے گزارا گیا تھا۔

 

Jobs In ministry of Kashmir 

Watcher:
technicalguru
Leave a Comment

This website uses cookies.